Free Web Hosting Provider - Web Hosting - E-commerce - High Speed Internet - Free Web Page
Search the Web

Daily The Qaumi Namaindgi Lahore-Chief Executive_Parvaiz Akhter Bhatti

Qaumi Namaindgi Lahore Latest News

Today s' Paper

جرائم پیشہ عناصر کو انجام تک پہنچایا جائیگا:وزیراعظم

تمام ادارے اور ایجنسیاں آپس میں رابطے بہتر کریں،گرفتار ملزمان کے چالان فوری طور پر عدالتوں میں پیش کیے جائیں ، انسداد دہشت گردی عدالتوں کی تعداد بڑھانے اور محفوظ مقام پر منتقلی کی ہدایت فورسز بغیر کسی دباؤ کے ٹارگٹڈ آپریشن جاری رکھیں ،جرائم پیشہ افراد اور ان کے سیاسی سرپرستوں کی گرفتاری کے لیے بھی مربوط پالیسی بنائی جائے،خطاب،کراچی ایئرپورٹ پر امن و امان سےمتعلق اجلاس
کراچی (اسٹاف رپورٹر) وزیرا عظم میاں محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ کراچی میں جرائم کے خاتمے کے لیے جدید ٹیکنالوجی اورسی سی ٹی وی کیمروں کے نظام کو توسیع دی جائے ۔جدید ٹیکنالوجی کے حصول میں وفاق سندھ کے ساتھ ہر ممکن تعاون کرے گا ۔انہوں نے قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ہدایت کی ہے کہ کراچی میں بھتہ خوروں ،ٹارگٹ کلرز اور دیگر جرائم پیشہ عناصر کے خاتمے کے لیے ٹارگٹڈ کارروائیاں کی جائیں، تمام ادارے اور ایجنسیاں آپس میں رابطوں کو بہتر کریں ۔امن کے قیام میں کوئی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی اور جرائم پیشہ عناصرکے خلاف آپریشن کو منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے کراچی ایئرپورٹ پر امن و امان کے حوالے سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا ، اجلاس میں گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد خان ،وزیر اعلیٰ سید قائم علی شاہ ،چیف سیکریٹری سجاد سلیم ہوتیانہ ،ڈی جی رینجرز ،آئی جی سندھ ،ایڈیشنل آئی جی کراچی سمیت دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی ۔اجلاس میں کراچی میں امن و امان کی مجموعی صورت حال ،جرائم پیشہ عناصر کے خلاف ٹارگٹڈ آپریشن ،گرفتاریوں ،سندھ پولیس کو جدید آلات کی فراہمی ،سی سی ٹی وی کیمروں کی تنصیب اور دیگر امور پر بریفنگ دی گئی ۔وزیرا عظم نے کہا کہ کراچی آپریشن کے حتمی نتائج کے حصول کے لیے تمام اداروں میں قریبی رابطے ضروری ہیں اور اس حوالے سے وفاق سندھ حکومت اورقانون نافذ کرنے والے اداروں کے ساتھ ہر ممکن تعاون کرے گا ۔ کراچی میں جاری آپریشن سے امن و امان کی صورت حال میں بہتری آرہی ہے لیکن جب تک شہر سے جرائم کا مکمل خاتمہ نہیں ہوگا اس وقت تک اس آپریشن جاری رکھا جائے گا انہوں نے ہدایت کی کہ گرفتار ملزمان سے تفتیش میں موجود سقم دور کیے جائیں ۔ گرفتار ملزمان کے چالان فوری طور پر عدالتوں میں پیش کیے جائیں تاکہ عدالتوں سے قانون کے مطابق ان کو سزا ہوسکے ۔ سندھ حکومت آپریشن پر جو تحفظات ہیں ان کو دور کرے ۔وزیرا عظم نے کہا کہ کراچی میں قیام امن کے لیے سیاسی اور مذہبی جماعتوں سے بھی مشاورت کی جائے اور آپریشن کو منظم بنانے کے لیے حکومت سندھ اور قانون نافذ کرنے والے ادارے مربوط حکمت عملی کے تحت کام کریں ۔وزیرا عظم نے انسداد دہشت گردی کی عدالتوں کی تعداد بڑھانے اور ان کی محفوظ مقام پر منتقلی کے حوالے سے بھی منظم پالیسی وضع کرنے کی ہدایت کی ۔وزیرا عظم نے کہا کہ کراچی پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کو جدید وسائل کی فراہمی کے حوالے سے بھی وفاق سندھ حکومت کے ساتھ ہر ممکن تعاون کرے گا۔ وزیر اعظم نے قانون نافذ کرنے والے اداروں کے سربراہوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ کراچی کا امن ملک کی ترقی کے لیے انتہائی ضروری ہے۔آپ بغیر کسی دباؤ کے ٹارگٹڈ آپریشن جاری رکھیں۔ جرائم پیشہ افراد اور ان کے سیاسی سرپرستوں کی گرفتاری کے لیے بھی مربوط پالیسی بنائی جائے ۔وفاق اورصوبائی حکومت آپ کے ساتھ ہیں ۔قبل ازیں وزیرا عظم کا کراچی ایئرپورٹ پر گورنر سندھ ،وزیر اعلیٰ ،چیف سیکرٹری اور آئی جی سمیت دیگر اعلیٰ حکام نے استقبال کیا ۔

Front Page

Back Page

Page 2

Page 3